مال تحویل دینے میں تاخیر ہونے کی صورت میں قیمت میں اضافہ کرنے پر

س: اگر کسى مال کى خريد و فروخت معين قيمت پر انجام پا جائے ليکن دونوں طرف اس پر اتفاق کريں کہ اگر خريدار نے قيمت کے عنوان سے ايسا چيک ديا جو کہ مؤجل ہو تو ايسى صورت ميں خريدار کچھ مزيد رقم فروخت کرنے والے کو ادا کرے گا۔ آيا ان دونوں کے لئے ايسا کرناجائز ہے؟

ج: اگرمعين قيمت پر مال فروخت کر ديا گيا اور اضافى قيمت اصلى رقم کى تاخير کى وجہ سے اضافہ کى جا رہى ہے تو مذکورہ اضافى قيمت سود ہے اور شرعاً حرام ہے اور دونوں کے توافق کرنے سے مذکورہ اضافہ حلال نہيں ہو جاتا ہے۔

 

700 /